FEATURED INSTITUTIONS

RESULTS IN PAKISTAN

 

Class 5th Class 8th Class 10th Inter 1st Year Inter 2nd Year

 


FEATURED ARTICLE

سبق جلدی یاد کیسے کیا جائے How to Memorize Lesson

باتوں کو مشکل کیوں بنایا جائے اگر انہیں آسان طریقوں سے یاد رکھا جا سکتا ہے۔ ان مفید ٹپس کے ذریعے اپنی یاداشت کو بہتر بنائیں اور ساتھ ہی اپنی پڑھائی میں بہتری لائیں۔ 

ٹائمر کا استعمال کریں

یہ بات یقینا بہت مشکل ہوتی ہے کہ پڑھائی کے وقت کسی ایک مضمون پر توجہ دی جائے اور بعض اوقات یہ چیز بہت بور کرتی ہے۔ جب کہ آپ کو یہ بھی معلوم ہے کہ آپ کو گھنٹوں ڈیسک پر بیٹھ کر پڑھنا ہے۔ ایسے میں سب سے بہتر بات یہ رہتی ہے کہ مختلف مضامین پڑھنے کے لیے ٹارگٹ سیٹ کر لیا جائے جیسا کہ میتھس، انگلش اور دوسرے مضامین کے لیے وقت کا تعین کر لیا جائے کہ اتنی دیر تک فلاں مضمون پڑھنا ہے۔ اس طرح یہ ہو گا کہ آپ کا ذہن فوکس ہو جائے گا اور پڑھائی بھی بور نہیں کرے گی۔ لہذا ٹائم سیٹ کریں شروع میں 30 منٹ  پھر کچھ عرصے بعد 60 منٹ اور اسی طرح بتدریج ٹائم کو بڑھاتے جائیں۔ اور جتنا بھی ٹائم ٹارگٹ کیا ہے اس ٹائم کو صحیح طریقے سے استعمال کریں اور فوکس کر کے پڑھائی کریں۔ اور بیچ میں پانچ منٹ کا بریک لیں اپنی آنکھیں بند کر لیں اور ذہن کو تھوڑی دیر کے لیے سکون دیں۔ 

اپنی کتابوں میں دیے گئے سوالات کو دہرائیں یا ان نوٹس کو دہرائیں جو آپ نے کلاس میں لیکچر کے دوران تیار کیے ہیں۔ سوالات کو سادہ کاغذ پر لکھیں اور اس کے بعد ایک ٹارگٹ ٹائم منتخب کریں اور اس ٹائم کے اندر ان تمام تر سوالات کے جوابات لکھیں۔ اس سے نہ صرف آپ کو سوالات کے جوابات اچھے طریقے سے یاد ہو جائیں گے بلکہ وقت کا صحیح طور سے استعمال بھی ہو پائے گا۔


جو سیکھا ہے وہ پڑھائیں

مضمون یاد کرنے کے حوالے سے ایک بہت ہی بہترین ٹپ ہے کہ یاد کیا ہوا سبق کسی اور کو سکھانا جو کہ ایک نہایت ہی مظبوط طریقہ ہے مضمون کو یاد کرنے کا۔ پچھلے ایک گھنٹے میں آپ نے جو بھی پڑھا ہے اور سمجھا ہے وہ کسی دوسرے کو پڑھائیں اس سے یہ فائدہ ہو گا کہ آپ نے جو کچھ پڑھا ہے اس کو دوبارہ یاد کرنے میں مدد ملے گی اور جو کچھ آپ نے پڑھنے کے بعد دوسرے کو پڑھایا ہے وہ تمام باتیں آپ کے ذہن میں محفوظ ہو جائیں گی اور چند اہم باتیں یاد کرنے سے پورا مضمون ذہن میں تازہ ہو جائے گا۔ جو کچھ آپ نے پڑھا ہے یاد کیا ہے وہ اپنے کسی دوست یا گھر میں کسی بھائی بہن کو سنائیں اور ساتھ میں سمجھائیں کیا کہ آپ نے کیا پڑھا ہے۔ اگر کسی کو پڑھانے میں ہچکچاہٹ ہے تو خود اپنے آپ کو سنائیں یعنی شیشے کے سامنے کھڑے ہو جائیں اور پڑھا ہوا سبق خود اپنے آپ کو سنائیں جو ایک بہترین آئیڈیا ہے۔ ایک بڑا پیپر لیں اور جو کچھ پڑھا ہے اس کو پیپر پر لکھ لیں اور اپنے کمرے میں اپنے بیڈ کے بالکل سامنے دیوار پر اس جگہ شیٹ لگا دیں جہاں آپ کی فوری نظر جاتی ہو۔ اور کوشش کریں کہ وہ جگہ آپ سے قریب ہو۔ یہ پیپر شیٹ آپ کو بلیک بورڈ کا کام دے گی اور وقتا فوقتا آپ اس کو دیکھ کر پڑھ سکیں گے اور اس طرح کافی باتیں ذہن میں محفوظ ہو جائیں گی۔

ذہن میں تصور بنائیں

ذہن میں کسی چیز کا تصور بنانا ایسا ہی ہے جیسا کہ آپ نے بہت سی جگہیں دیکھیں اور کچھ اہم باتوں کو ذہن میں محفوظ کر لیا۔ جو کہ ذہن کو تازہ رکھنے کا ایک طریقہ ہے۔ کیونکہ اس طرح آپ نے بہت سی معلومات کو ذہن میں جگہ دے دی ہے اور جب آپ کسی جگہ کو یاد کریں گے جو اس سے پہلے آپ دیکھ چکے ہیں تو اس طرح بہت سی باتیں آپ کے ذہن میں تازہ ہوں گی۔ یعنی وہ تمام باتیں ایک کہانی کی طرح ذہن میں محفوظ ہو چکی ہوں گی۔ اس کا فائدہ یہ ہوتا ہے کہ جب انسان کسی تاریخی عمارت کو دیکھتا ہے یا بہت سی مشہور جگہوں کو دیکھتا ہے تو کئی اہم باتیں ان جگہوں کے بارے میں اس کے ذہن میں محفوظ ہوتی ہیں۔ اسی طرح جب آپ کوئی مشہور آب بیتی یا کتاب پڑھتے ہیں تو وہ تو اہم باتیں ذہن میں محفوظ ہو جاتی ہیں تو اس کو ذہن میں بنایا جانے والا تصور کہا جاتا ہے۔

ورزش کو معمول بنائیں

ورزش کرنا انسانی جسم اور دماغ کے لیے بہت ضروری ہے۔ جب کئی گھنٹے پڑھائی کے بعد آپ تھک جاتے ہیں تو اس کا مطلب ہے آپ کے دماغ کے ساتھ جسم کو بھی کچھ دیر ریسٹ کی ضرورت ہے۔ سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ جو لوگ پڑھائی کے بعد ورزش کو معمول بناتے ہیں وہ دوسرے لوگوں کی نسبت ذيادہ بہتر یاداشت کے حامل ہوتے ہیں اور ورزش ان کی چیزوں کو ذیادہ اچھے طریقے سے یاد کرنے میں مدد کرتی ہے۔ ورزش کے دوران لمبی لمبی سانسیں لینے سے دماغ کو آکسیجن ملتی ہے سوچنے اور یاد کرنے کی صلاحیتوں میں اضافہ ہوتا ہے۔

Brain and Eyesight treatment دماغی اور نظر کی کمزوری کا علاج